افغانستان: ہسپتال کے قریب خودکش بم حملہ، بیس افراد ہلاک

نیوز ڈیسک (ریپبلکن نیوز) افغان صوبہ زابل کے شہر قلات میں کار بم حملے کے نتیجے میں تقریبا 20 افراد ہلاک اور 100 کے قریب زخمی ہو گئے۔

افغان وزارت دفاع کے حکام کے مطابق حملہ آور زابل میں انٹیلی جنس ایجنسی کے ٹریننگ بیس کو نشانہ بنانا چاہتے تھے لیکن انہوں نے گاڑی اسپتال کے قریب پارک کر دی۔

گورنر زابل نے بھی دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دھماکے کا ہدف انٹیلی جنس سروسز کی عمارت تھی۔

صوبائی کونسل کے رکن حاجی عطا جان نے بتایا کہ کار حملے میں 20 افراد ہلاک اور 95 زخمی ہوئے۔

افغان طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کی اور کہا کہ انکا ٹارگٹ اور مرنے والے تمام سیکیورٹی اہلکار اور ذمہ داران ہیں ـ

انہوں نے مزید بتایا کہ حملے میں افغان انٹیلی جنس ایجنسی این ڈی ایس کی عمارت کو بھی نقصان پہنچا تاہم یہ پتہ نہیں کہ وہاں کوئی جانی نقصان ہوا کہ نہیں۔

حاجی عطا نے بتایا کہ ہلاک شدگان کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا ہے کیونکہ بہت سے لوگ ملبے تلے دبے ہوئے ہیں جب کہ شدید زخمیوں میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد بھی شامل ہے۔

خیال رہے کہ امریکا اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ختم ہونے کے بعد افغانستان میں بم دھماکوں اور تخریب کاری کی کارروائیوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں