آئی ایم ایف پاکستان سے پریشان، وفد بھیجنے کا اعلان

نیوز ڈیسک (ریپبلکن نیوز) پاکستان کے بڑھتے مالیاتی خسارے، ٹیکس اہداف کے حصول میں ناکامی اور توانائی سیکٹر کے نقصانات سے آئی ایم ایف پریشان ہے اور اس نے رواں ماہ 16 ستمبر کو ایس او ایس مشن پاکستان بھجوانے کا اعلان کیا ہے۔

پاکستان کے وزارت خزانہ کے حکام نے اس باتے کی تصدیق کی ہے اور کہا کہ آئی ایم ایف کا ایس او ایس مشن پاکستان آئے گا ،آئی ایم ایف مشن کو ٹیکس آمدن کے حوالہ سے بریفنگ دی جائے گی۔

پاکستان کے وزارت خزانہ کے حکام کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے مشن کے ساتھ ٹیکس ہدف کے حصول ، مالی خسارہ کم کرنے کے لیے مختلف تجاویز پر غور کیا جائے گا۔

توانائی کے خسارے کم کرنے کے لیے بھی مشاورت ہوگی، وزارت خزانہ حکام کا کہنا تھا کہ ایس او ایس مشن معاشی ڈکٹیشن نہیں دیتا،آئی ایم ایف کا ایس او ایس مشن منی بجٹ بنوانے نہیں آ رہا۔

واضح رہے کہ پاکستان نے حال ہی میں آئی ایم ایف سے تقریباً 6 ارب ڈالر قرض کا پیکج حاصل کیا ہے، اس سلسلے میں وزیراعظم عمران خان اور کرسٹین لیگارڈ کے درمیان بھی ملاقاتیں ہوئی ہے۔

آئی ایم ایف کی جانب سے قرض کے حصول اور معاہدوں پر اپوزیشن جماعتوں نے بھرپور احتجاج کیا ہے ، آئم ایم ایف نے کہا تھا کہ پاکستان کو بین الاقوامی اداروں سے 38 ارب ڈالرز کا قرضہ ملے گا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں