بزدل پاکستان آرمی کا زور صرف عورتوں اور بچوں پر چلتا ہے۔ نواب مہران مری

لندن (ریپبلکن نیوز) بلوچ آزادی پسند رہنما نواب مہران مری نے پاکستانی فوج کو جنسی درندہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک مہینے کے اندر بلوچستان میں دو بلوچ خواتین کو پاکستانی فورسز نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔

نواب مہران مری نے کہا اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ بزدل پاکستانی آرمی نے ایک ماہ کے اندر دو بلوچ عورتوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بلاتکاری پاکستانی آرمی میں اتنی ہمت نہیں کہ کسی ریگولر آرمی کا مقابلہ کرتے ہوئے جنگ لڑ سکے۔ یہ بلاتکاری آرمی ہے۔پاکستان آرمی نے 1971 کی جنگ میں دو لاکھ بنگالی خواتین کو بھی جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ اور اب یہی سب کچھ بلوچستان میں دہرایا جارہا ہے۔

نواب مہران مری نے کہا کہ جب بات ہندوستانی فوج کی آجائے تو پاکستان آرمی اپنے پتلونوں میں پیشاب کردیتے ہیں لیکن جب بات مظلوم بچوں اور عورتوں کی ہو تو وہاں یہ دلہیر بنتے ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں