بلوچستان حکومت عوام کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔ نائب صدر بی این پی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر ملک عبدالولی کاکڑ نے کہا ہے کہ بلوچستان حکومت عوام کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکی ہے حکومت کو چلانے کیلئے عوامی سوچ ہونی چاہیے مگر موجودہ حکمرانوں کے پاس کوئی سیاسی سوچ نہیں ہے سوشل میڈیا کے ذریعے حکومتیں نہیں چلا یا کرتے بی این پی اپنے حقوق کیلئے آواز بلند کرتے رہیں گے۔

بلوچستان نیشنل پارٹی محرم الحرام کے بعد کوئٹہ میں مرکزی جلسہ کرے گی ملکی معاملات میں بہتری لانے کے لئے تمام سیاسی جماعتوں کو اکٹھا ہونا ہوگا ملک کو بحرانوں سے نکالنے کے لئے آل پارٹیز کانفرنس بلانے کی ضرورت ہے بلوچستان نیشنل پارٹی صوبے کے معاملات پر کوئی سودا بازی نہیں کرے گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر بات چیت کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت ہم جس حالت سے گزررہے ہیں سب کو سمجھنا چاہئے جب ہمسایہ ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات نہیں ہونگے جب تک ہمسایہ ممالک کے ساتھ تعلقات اچھے نہیں ہونگے اس وقت تک ہم ملکی معاملات کو بہتر نہیں کرسکتے کشمیر کے مسئلہ پر کوئی پیشرفت نہیں ہوئی مسئلہ کشمیر سمیت تمام معاملات کو بہتری کی طرف گامزن کرنے کے لئے وفاقی حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کو کردار ادا کرنا ہوگا بلوچستان نیشنل پارٹی صوبے کے حقوق کی سیاست کررہی ہے اور بلوچستان نیشنل پارٹی صوبہ کے معاملات میں پر گہری نظر ہے۔

اگر کسی نے بھی صوبے کے معاملات میں کوئی رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی تو اس کی تمام تر ذمہ داری حکمرانوں پر عائد ہوگی نواب امان اللہ زہری ایک سیاسی و قبائلی رہنماء تھے اور انہیں قتل کرنے سے صوبہ کے معاملات پرگہرا اثر پڑا ان کے قاتلوں کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے۔

گرفتاری کی صورت میں نہ ہونے کے بعد بلوچستان نیشنل پارٹی احتجاج کرنے پر مجبور ہوگی کیونکہ ہم سمجھتے ہیں جب تک حکومت ان معاملات میں دلچسپی نہیں لے گی اس طرح حالات بہتری کی طرف گامزن نہیں ہوسکتے حکمرانوں کو چاہئے کہ وہ ان معاملات پر سنجیدگی کا مظاہرہ کریں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں