بلوچستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر ایف بی ایم کا لندن میں مطاہرہ

لندن (ریپبلکن نیوز) فری بلوچستان موومنٹ یوکے زون کی جانب سے گذشتہ روز ایرانی ایمبیسی لندن کے سامنے مظاہرہ کیا گیا۔مظاہرہ کا مقصد ایرانی حکومت سے بلوچستان میں اپنے مظالم کو بند کرنے اور بلوچ قوم کی نسل کشی روکنے کے ساتھ ساتھ بلوچ سرزمین کی آزادی کے مطالبات تھے۔

بلوچستان میں انسانی حقوق کی بے انداز پامالیوں کے خلاف فری بلوچستان موومنٹ برسرپیکار ہیں فری بلوچستان موومنٹ نہ صرف مشرقی و مغربی بلوچستان کی آزادی کی بات کرتی ہیں بلکہ دنیا میں ہر جگہ بلوچ موجود ہیں ان کی بنیادی حقوق کی تحفظ کے لیے آواز اٹھاتی ہیں ۔

ایران اور پاکستان دونوں نے بلوچستان کو غیر قانونی طورپر اپنا غلام بنائے ھوئے ہیں ۔ بلوچ قوم کی نسل کشی جاری ہیں، بلوچ قومی ثقافت اور تاریخ کو مسخ کیا جارہا ہیں ۔ایران بلوچ قوم کی بنیادی حقوق پامال کیے ھوئے ھیں ۔ بلوچ قوم کو اپنی زبان اور شناخت سے محروم رکھا گیا ہے ۔

عالمی برادری کو چاہیے کہ وہ بلوچ قوم کی مکمل حمایت کرکے بلوچستان کو آزاد کرانے میں مدد کریں۔مظاہرہ میں فری بلوچستان موومنٹ کے مرکزی نائب صدرڈاکٹر مصطفی بلوچ ،بلوچ راجی زرمبش کے عبداللہ بلوچ، بلوچ دانشور شبیر بلوچ۔۔ فری بلوچستان موومنٹ یوکے زون کے آرگنائزر شاھد بلوچ نے مظاہرہ میں شرکت کرنے والوں کا شکریہ ادا کیا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں