بلوچستان میں حکومتی رٹ کمزور ہوچکی ہے۔ ڈاکٹر مالک بلوچ

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز) نیشنل پارٹی کے سربراہ ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا ہے کہ بلوچستان میں حکومتی رٹ کمزور ہے ہماری خواہش ہے کہ ایک ایسی حکومت ہو جو عوام کی فلاح وبہبود کیلئے کام کریں ایسا ملک چاہتے ہیں۔

جہاں پر مکمل آزادی ہو سلیکٹڈ حکومت کی تمام دعوے ناکام ہوچکے ہیں گوادر میں بلوچستان کو پورا حق دیا جائے چاہتے ہیں کہ گوادر کو بلوچستان کے حوالے کیا جائے پاک بھارت جنگ کے امکانات کم ہیں اللہ نہ کرے کہ جنگ ہو ان خیالات کااظہار انہوں نے پشاور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر سینیٹر طاہر بزنجو بھی موجود تھے ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا کہ بلوچستان میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے۔

اور حکومتی رٹ بہت کمزور ہے ایسے لوگوں کو اقتدار میں لا یا گیا ہے جو کونسلری کی سیٹ بھی جیتنے کے قابل نہیں ہیں سال گزرنے کے باوجود وہاں پر ترقیاتی عمل شروع کیا لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کئے جارہے ہیں میں سمجھتا ہوں کہ این ایف سی کے پیسے کہاں گئے گوادر میں بلوچستان کو پورا حق دیا جائے چاہتے ہیں گوادر کو بلوچستان کے حوالے کیا جائے اور وفاقی حکومت سازش کے تحت گوادر کا کنٹرول وفاق کے زیر انتظام لانا چاہتے ہیں۔

جس کی ہم ہر فورم پر مذمت کرتے ہیں سی پیک اور گوادرسے بلوچستان کو کچھ نہیں دیا جارہا صرف دعوے کئے جارہے ہیں کہ بلوچستان کو ترقی دی جارہی ہے مگر ایسا کچھ نہیں ہے جس سے بلوچستان کے عوام کو باور کرا یا جاسکے کہ واقعی بلوچستان میں سی پیک اور گوادر سے فائدہ مل رہا ہے انہوں نے کہا کہ سب کو اکھٹا کر کے کمزور طبقے کو طاقتور بنا نا چاہتے ہیں مگر حکمران ایسا کرنے نہیں دے رہیں۔

جب تک افغانستان میں امن نہیں آئے گا اس وقت خطے میں ترقی ممکن نہیں ہماری خواہش کے افغانستان میں امن قائم ہو تاکہ اس کے اثرات خطے پر پڑھ سکیں اس وقت ملک بد حالی کاشکار ہے اور وفاقی حکومت تمام تر مشکل حالات کے باوجود سیاسی قیادت کو اعتماد میں نہیں لیاجارہا موجودہ حکومت سیاسی قائدین کو جیلوں میں ڈال رہے ہیں اس طرح ملکی حالات ٹھیک نہیں ہوسکتے سلیکٹڈ حکومت کے تمام دعوے ناکام ہوچکے ہیں۔

اور عوام کے ساتھ جو دعوے کئے تھے ان میں سے ایک بھی وعدے کو پورا نہیں کیاگیا ایسا ملک چاہتے ہیں جہاں پر مکمل آزادی ہو اور ہماری خواہش ہے کہ ایک ایسی حکومت ہو ج عوام کی فلاح وبہبود کیلئے کام کرے پاک بھارت کے کشیدگی پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاک بھارت کے جنگ کے امکانات بہت کم ہیں۔

اللہ نہ کرے کہ جنگ ہو نیشنل پارٹی کے سینیٹر میر طاہر بزنجو نے کہا کہ موجودہ حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے اور وفاقی حکومت احتساب نہیں انتقامی کارروائی کررہی ہے ہم چاہتے ہیں کہ احتساب سب کا ہو اور برابر ہو ہم نے 7بار وزیر قانون کو سینیٹ کے قائمہ کمیٹی میں بلائے وہ نہیں آیا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں