بلوچ قومی اتحاد اور سنگل پارٹی پر نواب براہمدغ بگٹی کا موقف

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن پارٹی اور آزادی پسند رہنما نواب براہمدغ بگٹی نے بلوچ قومی اتحاد اور بلوچ قومی سنگل پارٹی پر اپنا موقف ایک بار پھر واضح کردیا۔

بلوچ ریپبلکن پارٹی جرمنی چیپٹر کی جانب سے شہید نواب اکبر خان بگٹی کی 13 ویں یومِ شہادت کے موقع پر 25 اگست کو جرمنی کے شہر فرنکفرٹ میں ایک سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں نواب براہمدغ بگٹی نے زریعہ ویڈیو کال خطاب کیا اور لوگوں کے سوالات کا جواب دیا۔

سیمینار کے شرکا میں سے ایک شخص نے نواب صاحب سے بلوچ قومی اتحاد اور شہید نواب بگٹی کی خوائش قومی سنگل پارٹی کے قیام کے بارے میں سوال کیا جس کے جواب میں براہمدغ بگٹی نے کہا کہ اتحاد سب چاہتے ہیں لیکن اتحاد ہو نہیں رہا۔

انہوں نے کہا کہ بلوچ سنگل پارٹی شہید نواب اکبر خان بگٹی کی اولین ترجیح تھیں لیکن وہ شہید ہوگئے اور یہ سلسلہ رکھ گیا، لیکن بلوچ قومی اتحاد کے حوالے سے سب حامی بھرتے ہیں لیکن پھر بھی اتحاد ہو نہیں رہا۔

سنگل پارٹی کی تشکیل کا زمہ دار اکیلا بلوچ ریپبلکن پارٹی نہیں ہوسکتا، البتہ بی آر پی کی کوشش ضرور ہے، دوسری جماعتوں کی بھی کوششیں ہیں۔ غیر مناسب ہوگا کہ میں آج کے دن دوسرے دوستوں پر الزام لگاوں، آج کے دن یہ موضوح نہیں ہے۔

ہر کوئی کہتا ہے کہ ہمارا کوئی قصور نہیں، غلطی دوسری طرف سے ہورہی ہے، ہر کوئی کہتا ہے کہ ہم کوشش کر رہے ہیں، اسی طرح میں بھی کہتا ہوں کہ میں بھی قومی اتحاد اور سنگل پارٹی کی لیے کوشش کر رہا ہوں اور میں بھی یہی کہتا ہوں میں اس میں ہماری کوئی غلطی نہیں ہے۔ آج کے دن میں کسی کا نام لیتے ہوئے الزام نہیں لگانا چاہتا۔ یقیناََ یہ افسوسناک بات ہے کہ ہم آج تک سنگل پارٹی یا اتحاد قائم کرنے میں ناکام ہیں، اسے ہماری کمزوری بھی کہہ سکتے ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں