بے گناہ بٹیلا کے قاتلوں کو قانون کے کٹھرے میں لایا جائے: نوابزادہ گہرام بگٹی

سوشل میڈیا ڈیسک (ریپبلکن نیوز) بلوچستان اسمبلی کی رکن نوابزادہ گہرام خام بگٹی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ ڈیرہ بگٹی میں قتل ہونے والے ذلفقار بگٹی کے قتل اور اس کے معصوم بیٹے کے اغوا کاروں کو قانون کے کھٹیرے میں لایا جائے۔

انہوں نے حکومتی اداروں سے مطالبہ کیا ہے کہ مقتول ذلفقار بگٹی کے معصوم بیٹے کو اغوا کاروں سے چھڑانے میں اپنا کردار کریں۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں ڈیرہ بگٹی کے علاقے بیکڑ میں ایک نوجوان کو فائرنگ کر کے قتل کردیا گیا تھا اور دوسرے روز قتل ہونے والے شخص کے اہلخانہ نے بارکھان میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے بیٹے کے قتل اور معصوم نواسے کے اغوا میں سابق وزیر داخلہ سرفراز بگٹی اور ان کا دست راست وڈیرہ شامراد مسوری ملوث ہیں۔

جبکہ آج سرفراز بگٹی کے چچازاد بھائی اور سابق ایم پی اے طارق مسوری بگٹی کے بڑے بھائی نے سوشل میڈیا پر اپنا ایک رکارڈنگ شائع کیا ہے جس میں ان کو شاہ مراد مسوری سے بات کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے جس میں شامراد نے قتل اور اغوا کے واقعہ کو قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے اپنا بدلہ لیا ہے جبکہ شامراد نےکہا کہ مقتول کے چار سالہ بچے کو اس وقت رہا کیا جائے گا جب اہلخانہ ان کے خلاف درج ایف آئی آر واپس لیں گی۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں