سرنڈر نا کرنے پر بہن کو گھر میں گھس کر قتل کردینگے، آئی ایس آئی میجر کا ایک بلوچ کو دھمکی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) آزادی پسند کارکن کو پاکستانی خفیہ ایجنسی (آئی ایس آئی) کے حاضر سروس میجر کی طرف سے دھمکی، سرنڈر نا کرنے پر بہن کو قتل کردینگے۔

زرائع نے ریپبلکن نیوز کو پاکستانی خفیہ ایجنسی (آئی ایس آئی) کے گوادر میں حاضر سروس میجر، میجر کاشف کے وائس پیغامات بھیجے ہیں جن میں میجر کاشف پرویز بلوچ نامی آزادی پسند دوست کو سرنڈر ہونے کے لیے قائل کر رہا ہے، جبکہ سرنڈر کرنے سے انکار کرنے پر پرویز بلوچ اور اسکی بہن کو قتل کرنے کی دھمکیاں دے رہا ہے۔

میجر کاشف پرویز بلوچ کے ساتھ اپنی گفتگوں میں کہتا ہے کہ بلوچ قوم کو استعمال کیا جارہا ہے، بیرونی فنڈنگ سے بلوچستان کے حالات کو خرات کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، مزید کہتا ہے کہ تمام مسلمان آپس میں بھائی بھائی ہیں اور پاکستان میں تمام اقوام پاکستانی پرچم کے تلے ایک ہیں، اپنی میٹی میٹی باتوں سے پرویز بلوچ کو قائل کرنے میں ناکام ہونے پر آئی ایس آئی کا میجر اپنی اصلی روپ میں آتے ہوئے پرویز بلوچ اور اسکی بہن کو قتل کرنے کی دھمکی دیتا ہے۔

طویل گفتگوں میں پرویز بلوچ کا سرنڈر کرنے سے انکار کرنے پر آئی ایس آئی کا میجر گالم گلوچ پر اتر آتا ہے اور پرویز بلوچ کو دیکھتے ہیں قتل کرنے کی دھمکی دیتا ہے اور کہتا ہے کہ اگر وہ سرنڈر نہیں کرتا تو گوادر میں اسکی بہن کو گھر میں گھس کر قتل کردیا جائیگا۔

آئی ایس آئی کا کارندہ انتہائی نازیبا الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے پرویز بلوچ کو دھمکیاں دیتا ہے اور اسکی بہن کو گھر میں گھس کر قتل کرنے کی دھمکی دیتا ہے۔

زرائع نے ریپبلکن نیوز کو بتایا کہ پرویز بلوچ کا تعلق بلوچستان کے ضلع کیچ کے علاقے دشت سے ہے جو آج کل گوادر میں رہائش پزیر ہے۔ پرویز بلوچ کے چند ساتھیوں نے کچھ عرصہ قبل سرنڈر کیا تھا جن کے زریعے آئی ایس آئی نے پرویز بلوچ سے رابطہ قائم کیا اور انہیں بھی سرنڈر کرنے کے لیے قائل کرنے کی کوشش کیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں