سوشل میڈیا میں مجھے گوادر حملہ آور قرار دیا جارہا ہے۔ حمل کاشانی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) گوادر حملے کے بعد سے سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ کو وائرل کیا جارہا ہے جس میں حمل کاشانی نامی شخص کو گوادر حملے میں ملوث بلوچ لبریشن آرمی کا مزاحمتکار قرار دیا جارہا ہے۔

حمل کاشانی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے پیغامات میں کہا ہے پچھلے دو دنوں سے سوشل میڈیا میں ایک پوسٹ واہرل کیا جارہا ہے کہ میں گوادر حملہ آور ہوں اور مجھے گوادر حملے میں شامل حمل سے منسوب کرکے میرے خلاف ایک منظم طریقے سے مہم چلائی جارہی ہے میں اس پوسٹ کے توسط سے یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ مجھے ان حملہ آوروں سے منسوب نہ کیا جائے۔

اسی بارے میں: پاکستانی میڈیا کا ناکام پروپیگنڈا، گوادر حملے میں ملوث مزاحمتکار کو مسنگ پرسن قرار دے دیا

ریاستی سوشل میڈیا ٹیم باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت سوشل میڈیا پر لاپتہ افراد کے مسئلے کو متنازعہ بنانے کے لیے جھوٹے پروپیگنڈہ کا سہارا لے رہے ہیں۔

 

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button