شہید نواب اکبر بگٹی کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے لندن، ساوتھ کوریا، گریس اور جرمنی میں تقریبات کا انعقادکیا گیا۔ شیر محمد بگٹی

کوئٹہ (ریپبلک نیوز) بلوچ ریپبلکن پارٹی کے مرکزی ترجمان شیر محمد بگٹی میڈیا کو جاری بیان میں کہا ہے کہ ڈاڈائے قوم شہید نواب اکبر خان بگٹی کی یوم شہادت کے دن پارٹی کی جانب سے لندن اور ساؤتھ کو یار میں سیمینار کا انعقاد کیا گیا جبکہ جرمنی میں پاکستانی کونسل خانے کے سامنے ایک احتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا گیا۔

ترجمان نے کہا ہے کہ برطانیہ کے شہر لندن میں ڈاڈائے قوم کے 13ویں برسی کے موقع پر ایک سیمینار منعقد کیا گیا جس میں بلوچ رہنما عبداللہ بلوچ، نصیر دشتی، منصور بلوچ، نثار بلوچ، عمیر بلوچ سمیت لندن میں مقیم رہنماؤں اور کارکنان نے شرکت کی اور عظیم بلوچُ رہنما نواب اکبر خان بگٹی کو خراج تحسین پیش کیا۔

جبکہ ساؤتھ کوریا میں بی آر پی کی جانب سے ایک سیمینار منعقد ہوا جس میں پارٹی کارکنان نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی کے مرکزی رہنما امیر بلوچ نے کہا کہ شہید نواب اکبر خان بگٹی کی شہادت بلوچستان کیلئے یقیناً ایک بڑا نقصان ہے مگر ان کی شہادت نے تاریخ رقم کی ہے جس عمر میں انہوں نے بندوق اٹھا کر سرزمین کی دفاع کیلئے پہاڑوں کو مسکن بنایا اس کی اس صدی میں نزیر نہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہید نواب اکبر خان بگٹی کی ہمیشہ خواہش تھی کہ بلوچ قوم کو ایک سنگل پارٹی کے سایہ تلے متحد کیا جائے اور اس سلسلے میں بی آر پی کی قیادت نے ہمیشہ کوششیں کیں ہیں اور آگے بھی کرتے رہینگے۔

جبکہ جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں پاکستانی کونسل خانے کے باہر بی آر پی اور بی آر ایس او کے کارکنان نے ایک احتجاجی مظاہرہ کیا جہاں کارکنان نے ڈاڈائے قوم کی بہمانہ قتل کے خلاف نعرے بازی کی اور احتجاج کیا۔

دوسری جانب یورپی ملک گریس میں بھی بی آر پی کے کارکنان نے ایک تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیا جس میں پارٹی رہنما اسلم کیازئی بلوچ نے خطاب کرتے ہوئے ڈاڈائے قوم کو خراج عقیدت پیش کیا۔ جبکہ افغان کمنیٹی نے بھی پروگرام میں شرکت کرتے ہوئے بلوچ رہنما کو ان کے عظیم جہد اور قربانی پر سرخ سلام پیش کیا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں