طلبا تنظیموں کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کرنے سے بہتر ہے بلوچستان یونیورسٹی کوہی بند کردیں۔ ثنااللہ بلوچ

بلوچستان یونیورسٹی میں سیاسی، سماجی و معاشرتی معاملات پر پابندی عائد کرنے سے بہتر ہے یونیورسٹی کو ہی بند کردیں۔ رکن بلوچستان اسمبلی ثنا اللہ بلوچ

گورنر بلوچستان کی جانب سے بلوچستان نونیورسٹی میں طلبا تنظیموں کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کرنے کے ردِ عمل میں بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے رہنما اور رکن بلوچستان اسمبلی ثنااللہ بلوچ نے کہا ہے کہ بلوچستان یونیورسٹی میں سیاسی،سماجی ومعاشرتی معاملات پر پابندی سے بہتر ہے کہ یونیورسٹی کو ہی بند کردیں کیونکہ یونیورسٹی قاہمُ ہی سیاسیات، سماجیات، تاریخ کے شعبوں پر ہے.منفی وخفیہ سرگرمیوں سے بہتر ہے کہ نوجونواں کوسیاسی، سماجی معاملات پر اظہار رائے و یونین سازی کی آزادی دی جاہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں