پاکستانی فوج کا پشتون تحفظ موومنٹ کے جلسے پر حملہ، محسن داوڈ سمیت 25 افراد زخمی، علی وزیر گرفتار

نیوز ڈیسک(ریپبلکن نیوز) پاکستانی فوج نے اپنی دھمکی پر عمل کرتے ہوئے پشتون تحفظ موومنٹ کے رہنماوں پر قاتلانہ حملہ کیا ہے جس میں پی ٹی ایم کے رہنما محسن داوڈ سمیت پچیس کے قریب لوگ شدید زخمی ہوئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق بنوں سے وزیرستان جانے والے پی ٹی ایم کے قافلے پر جوکہ ممبر اسمبلی محسن داوڑ اور علی وزیر کی قیادت میں جارہا تھا اُس قافلے پر پاکستان آرمی نے فائرنگ کردی ابھی تک کی اطلاعات کے مطابق اُس فائرنگ سے 25 افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں سے کچھ کی حالت شدید نازک بتائی جاتی ہے۔علی وزیر جوکہ ممبر قومی اسمبلی بھی ہیں کو  پاکستانی فوج نے حراست میں لیکر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

 خیال رہے کہ پاکستانی فوج گزشتہ کئی عرصے سے پی ٹی ایم کو نشانہ بنانے کی دھمکی دیتی رہی ہے اور بالآخر فوج نے اپنی دھمکی پر عمل کرتے ہوئے پی ٹی ایم کے پرامن جسلہ پر حملہ کیا اور پی ٹی ایم کے رہنماوں کو نشانہ بنایا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں