پاکستان نے ہم سے امداد لیکر ہمارے خلاف سازشیں کیں ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ

واشنگٹن (ریپبلکن نیوز) واشنگٹن میں پاکستان کے وزیرِ اعظم عمران خان اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ملاقات میں صدر ٹرمپ نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں ہمارے لیے پولیس مین کا کردار ادا کریگا۔

تفصیلات کے مطابق صدر ٹرمپ نے کہا کہ ہم چاہے تو دس دنوں میں پورے افغانستان کا خاتمہ کرسکتے ہیں لیکن میں دس ملین لوگوں کو مارنا نہیں چاہتا اس لیے اس جنگ کو جیتنے کے لیے پاکستان ہمارے لیے پولیس مین کا کردار ادا کریگا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ کشمیر کے مسئلے کے حل کے لیے ثالث کا کردار نبھانے کو تیار ہیں۔

ٹرمپ نے کہا کہ امریکہ 19 سالوں سے افغانستان میں جنگ کی حالت میں ہے ہم وہاں پولیس مین کا کردار ادا نہیں کرنا چاہتے اس لیے پاکستان وہاں ہمارے لیے پولیس مین کا کردار نبھائے گا۔

صدر ٹرمپ نے کہا کہ ہم وہاں جنگ نہیں لڑ رہے بلکہ اسکول، ہسپتال اور دیگر ترقیاتی منصوبوں پر کام کر رہے ہیں حالانکہ یہ کام افغان حکومت کا ہے ہمارا نہیں ، اور ہم چاہے تو کچھ ہی دنوں میں اس جنگ کا مکمل خاتمہ کرسکتے ہیں، لیکن ہم لوگوں کا قتل عام نہیں چاہتے۔

صدر ٹرمپ نے صحافی کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے پاکستان کو اربوں ڈالر دیئے لیکن افسوس کہ پھر بھی وہ ہمارے خلاف کام کرتے رہے، اس لیے ہم نے پاکستان کی امداد بند کردی ہے اور پاکستان کو مزید امداد دینے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، جب تک پاکستان امریکہ کے تعلقات بہتر نہیں ہوتے۔

امریکی صدر نے کہا کہ ہم افغانستان میں پولیس مین کی طرح کاروائی کرتے رہے ہیں اگر ہم فوجی بن کر کاروائی کریں تو کچھ ہی دنوں میں جنگ کا خاتمہ جوجائیگا، لیکن ہم دس ملین لوگوں کا قتل عام نہیں چاہتے بلکہ افغانستان کا پُرامن حل تلاش کر رہے ہیں جس میں ہمیں بہت زیادہ کامیابی ملی ہے۔،

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں