پسند و نا پسند کی بنیاد پر تعلیمی اداروں کو تباہ کیا جا رہا ہے،بی ایس او

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز) بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے مرکزی ترجمان نے بیان میں کہا ہے کہ تعلیمی اداروں میں میرٹ کی پامالی اقرباء پروری فیسوں میں اضافہ پسند و ناپسند کی بنیاد پر بھرتیوں سے بلوچستان کے تعلیمی اداروں کو مفلوج کیا جارہا ہے سردار بہادر خان ویمن یونیورسٹی نوشکی کیمپس کی حالیہ بھرتیوں میں قابلیت میرٹ کے بجائے رشتہ داری اور اقرباء پروری کو میرٹ بنایا گیا انٹرویو کے منٹس اور میرٹ کو تبدیل کیا گیا ، کیمپس میں ایم اےکے داخلوں کی بندش بھی طالبات کے ساتھ نا انصافی ہے، اب پہلے سے موجود مضامین میں بھی داخلے بند کئے گئے جو کیمپس کو ناکام کرنے کی سازش ہے ہم تعلیمی اداروں کابھرپور دفاع کرینگے .انہوں نے کہاکہ نوشکی کے اسکول سطح کے تعلیمی اداروں سمیت کالجز کو بھی فنڈز سمیت تمام امور میں نظر انداز کیا جارہا ہے ،انہوں نے کہا کہ نوشکی سمیت بلوچستان بھر میں بی ایس او پرامن طریقے سے سیاسی جدوجہد عوامی شعوری آگاہی اور تعلیمی حقوق کے لئے جدوجہد کررہی ہے لیکن نوشکی میں بی ایس او کے کارکنوں کے خلاف منفی زہنیت اور طاقت کے استعمال کی کوششوں کا سلسلہ تیز کر دیا گیا ہے تاکہ کارکنوں کو خوفزدہ اور پریشان کرکے تعلیم کے دروازے بند کئے جاسکیں اگر سلسلہ نہیں روکا گیا تو بلوچستان بھر میں نوشکی کے کارکنوں کے دفاع کے لئے بھرپور

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں