گوادر حملہ: بلوچ لبریشن آرمی کے چھوتے سرمچار کی لاش ہوٹل سے کچھ فاصلے پر برآمد

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) گوادر میں پرل کانٹی نینٹل ہوٹل پر بلوچ لبریشن آرمی کے چھوتے مزاحتمکار کی  لاش تین دن بعد ہوٹل سے کچھ فاصلے پرمل گئی۔ پولیس زرائع

پولیس کے مطابق حملہ آور کی لاش ہوٹل سے تقریبا دو کلومیٹر کے فاصلے پر جھاڑیوں کے قریب سے ملی ہے، لاش تین دن پرانی ہے اور اس کے سر سمیت جسم کے اوپری حصے کو جانور نوچ کے کھا چکے ہیں، حملہ آور کی لاش کے قریب سے ایک کلاشنکوف، 10 میگزین، 22 دستی بم، بارودی مواد،کلاشنکوف کی 368گولیاں، 2 انٹرکام سیٹ، ایک ڈیٹونیٹر،ایک ریمورٹ کنٹرول اور دو موبائل برآمد ہوئے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور کی موت کی وجہ معلوم کی جارہی ہے، بظاہر یوں معلوم ہوتا ہے جیسے حملہ آور نے خود کو گولی مارا ہے۔

واضح رہے بلوچستان کے ساحلی شہر گودار کے نجی فائیوسٹار ہوٹل پرل کانٹی نینٹل کو گیارہ مئی کی شام کو بلوچ لبریشن آرمی کی جانب سے حملے کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button