گوادر حملہ جاری, متعدد چینی اور ریاستی اہلکار ہلاک، ہوٹل سے گوادر پورٹ پر متعدد راکٹ فائر

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ لبریشن آرمی کے سرمچاروں اور ریاستی فورسز کے درمیان جھڑپیں جاری، بی ایل اے کے مطابق متعدد چینی سرمایہ کار اور ریاستی فورسز ہلاک ہوچکے ہیں۔

گوادر میں پرل کانٹینینٹل ہوٹل پر حملے کے بارے میں بلوچ لبریشن آرمی نے مزید تفصیلات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ حملہ اب تک جاری ہے جس میں بی ایل اے کے سرمچاروں نے ہوٹل کو اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔بی ایل اے کے مطابق حملے میں متعدد چینی سرمایہ کار اور ریاستی فورسز مارے جاچکے ہیں۔

ریپبلکن نیوز نیوز نے اس حوالے سے مسلح تنظیم کے ایک کمانڈر سے رابطہ کیا اور تفصیلات دریات کیں، مسلح تنظیم کے کمانڈر کا کہنا ہے کہ بلوچ مزاحمتکاروں نے ہوٹل پر قبضہ کرلیا ہے اور ریاستی فورسز ہوٹل میں داخل ہونے میں اب تک ناکامی کا شکار ہیں اور بلوچ مزاحمتکار اپنے مقصد کے حصول میں کامیاب ہوئے ہیں۔

مسلح تنظیم کے کمانڈر نے ریپبلکن نیوز کو بتایا کہ بلوچ مزاحمتکار پی سی ہوٹل کی عمارت سے گوادر پورٹ پر راکٹ حملے بھی کر رہے ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں