گوادر حملے پر پاکستانی فوج کی غلط بیانی، بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو جھوٹا دلاسہ دینے کی کوشش

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) گوادر حملے پر پاکستان فوج کے تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے اپنا بیان جاری کردیا، آئی ایس پی آر کے مطابق حملے میں فائیو اسٹار ہوٹل پر موجود گارڈ ن نے حملہ آوروں کو روکنے کی کوشش کی جس پر مسلح حملہ آوروں نے گارڈ کو قتل کردیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ حملہ ناکام بنادیا گیا ہے جبکہ بین الاقوامی میڈیا اور علاقائی زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ حملہ  آور جن کا تعلق بلوچ لبریشن آرمی سے ہے ہوٹل کے اندر داخل ہوچکے ہیں۔ اور بین الاقوامی زرائع ابلاغ میں بھی تصدیق کی گئی ہے کہ حملہ آوروں نے ہوٹل کے ایک فلور پر قبضہ کرلیا ہے۔

گوادر حملے کے باری میں:

گوادر: فائیو اسٹار ہوٹل کے ایک فلور پر بی ایل اے کے سرمچاروں نے قبضہ کرلیا

گوادر حملے کی زمہ داری بلوچ لبریشن آرمی نے قبول کرلی

گوادر کے پی سی ہوٹل پر مسلح افراد کا حملہ، شدید دھماکے و فائرنگ

پاکستانی فوج کا  تعلقات عامہ غلط بیانی کا سہارا لے رہا ہے، کیونکہ گوادر چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبوں کا مرکز ہے۔ جبکہ پورا گوادر پاکستانی فوج کے محاصرے میں جیل کا منظر نامہ پیش کرتا ہے ۔

پاکستانی فوج کی کوشش رہی ہے کہ گوادر میں بلوچ آزادی پسندوں کا مکمل خاتمہ کر کے دنیا کو باور کرایا جائے کہ گوادر ایک پرامن خطہ ہے جہاں سرمایہ کاری ہے وسیع مواقع موجود ہیں۔ لیکن گوادر میں بلوچ آزادی پسند تنظیموں کے حملے ریاستی دعوو کی دھجیاں اڑا دیتے ہیں۔ پاکستانی فوج غلط بیانی کر کے بین الاقوامی سرمایہ داروں کو جھوٹا دلاسہ دینے کی کوشش کررہا ہے۔

خیال رہے کہ گوادر کے پرل کانٹینینٹل ہوٹل بلوچ حملے کی زمہ داری بلوچ لبریشن آرمی نے قبول کرلی ہے، اور بی ایل اے نے حملے میں شامل مجید برگیڈ کے چار سرمچاروں کی تصاویر بھی جاری کردیئے ہیں۔s

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button