رپورٹس

  • ڈیرہ بگٹی :پاکستانی فوج بی اے پی کے نمائیدے کے حق میں سرگرم ووٹ نہ دینے پر عوام کو سنگین نتائج کی دھمکیاں

    ڈیرہ بگٹی (ریپبلکن نیوز) ڈیرہ بگٹی کے مخلتف علاقوں میں ایف سی کا عوام پر دباؤں، بلوچستان عوامی پارٹی کے…

    مزید پڑھیں
  • اکتوبر : 28آپریشن،30افراد لاپتہ، 8افراد شہید، سو سے زائد گھر لوٹ گئے، بی این ایم رپورٹ

    پ ر (ریپبلکن نیوز) بلوچ نےشنل موءومنٹ کے مرکزی سےکرےٹری اطلاعات دل مراد بلوچ نے اکتوبر کے مہینے کی تفصیلی رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا کہ اکتوبر کے مہینے میں بھی مقبوضہ بلوچستان میں پاکستانی فوج ،خفیہایجنسیوں اور فوج کے سرپرستی میں قائم ڈیتھ سکواڈزکی ظلم وبربریت جاری رہی ۔ آج بلوچستان لہولہان ہے اور بلوچ قوم آس بھری نگاہوں سے عالمی برادری کی جانب دیکھ رہی ہے ۔ دل مرادبلوچ نے کہا کہ اکتوبرکے مہینے میں پاکستانی فوج نے بلوچستان کے طول وعرض میں 28آپریشن کئے ،جن میں 30 افراد کو حراست میں لے کر لاپتہ کیا ۔ اسی ماہ 24 نعشےں برآمد ہوئےں ، جن میں سے 7 لوگوں کو فورسز نے قتل کیا، جبکہ ایک شخص کو فوج کے متوازی دہشت گردڈیتھ سکواڈنے قتل کیا ۔ 8 شہےدوں میں سے دو خواتےن ،دوعمررسیدہ اشخاص اورماڑہ میں شہید کئے گئے ۔ خواتین کو وہاں بچوں کےسامنے قتل کردیا گیا جبکہ دونوں عمررسیدہ بزرگوں کو کیمپ منتقل کرکے ٹارچر کے دوران قتل کرکے ان کی لاشیں پھینک دی گئیں ۔ اےک شخص رےاستی ڈےتھ اسکواڈ اور اےک فورسز کی فائرنگ سے شہےدہوا جبکہ اےک شخص زےر حراست شہےد ہوا ۔ اےک شخص فورسز کی تشدد سے بازےاب ہونے کے بعد شہےد ہوا ۔ 16 افراد کے ہلاکتوں کے محرکات سامنے نہ آ سکے جبکہ اےک لاش کی شناخت نہ ہوسکی ۔ فورسز نے دوران آپرےشنز سو سے زائد گھروں میں لوٹ مار کی ۔ 17افراد فورسز کی عقوبت خانوں سے بازےاب ہوئے ،جس میں سے اےک شخص 2015 سے،دو افراد2016 سے،تےن افراد 2017 سے،اےک2018 سے،دس افراد2019 سے فورسز کی حراست میں تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اس مہینے بلوچستان یونیورسٹی کا ہولناک اسکینڈل سامنے آیا جو بلوچ بیٹیوں کی خفیہ نگرانی کے کیمروں کے ذریعے ویڈیوبناکر انہیں بلیک میل کرنے کا ایک باقاعدہ سرکاری منصوبہ ہے ۔ اس کےذریعے سینکڑوں بلوچ بیٹیوں کی تذلیل کی گئی ۔ اس پر پارٹی چیئرمین خلیل بلوچ نے پہلے ہی رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی کا واقعہ ہماری قومی عزت پر حملہ اور غلامی کا ایک اور چرکاہے جوہماریروح پر لگی ہے ۔ بلوچ صدیوں تک اس واقعے کو نہیں بھولیں گے اور ریاست پاکستان سے اس کا تاریخی انتقام لیں گے ۔ بی این این کے مرکزی سےکرےٹری اطلاعات د ل مراد بلوچ نے کہا کہ اس مہینے مقبوضہ بلوچستان کے علاقے آواران، کےچ،پنجگور سمیت مختلف علاقے پاکستانی فورسز کے نشانے پر رہے ۔ پاکستان نےمقبوضہ بلوچستان کو اےک متقل گاہ و قےد خانے میں تبدےل کردیا گیا ہے جس سے بلوچستان میں ایک واضح بحران جنم لے چکاہے ۔ انہوں نے کہا کہ کچھ عرصہ قبل اورماڑہ رَچ کے باشندے حسن ولد شئے شیرونام کے ایک بزرگ شخص کا ویڈیو منظر عام پر آیا جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ پاکستانی فوج کے ڈیتھ سکواڈنے ان جینا حرام کردیا ہے۔ ڈیتھ سکواڈکارندے روزانہ ان پر حملہ آور ہیں ۔ ہمارا جان و مال اور عزت محفوظ نہیں ہیں ۔ اس ویڈیو میں وہ مدد کی اپیل کررہے ہیں کہ ہ میں ان بدمعاشوں سے نجات دلائی جائے ۔ اس احتجاجی ویڈیو کا یہانجام ہواکہ پاکستانی فوج نے حسن ولد شیرو ،ایک اور عمررسیدہ شخص لعل محمد ولد رزائی اوردوخواتین کو قتل کردیا گیا ۔ فوج نے رَچ میں آپریشن کے دوران دونوں بزرگوں کو حراست میں لے کر کیمپ منتقلکردیا جہاں انہیں بھیانک تشددسے قتل کردیا ۔ جبکہ اسی دوران دونوں خواتین کو بھی تشدد سے شہید کیا گیا ۔ ایک خاتون حاملہ اور ایک خاتون کے تین ماہ کا بچہ تھا ،لیکن اس ہولناک واقعے پر بھی کسی جانب سےکوئی آواز بلند نہ ہوا ۔ یہ صرف اورناڑہ کادردبھری قصہ نہیں ہے بلکہ آج کا پورابلوچستان یہی منظر پیش کررہاہے ۔ دل مراد بلوچ نے کہا کہ اوڑماڑہ کا واقعہ ہو یا یونیورسٹی کا واقعہ ،بلوچستان کے طول وعرض میں جاری فوجی بربریت یہ ثابت کرنے کے لئے کافی ہیں کہ قابض ننگی فوجی جارحیت ،قومی تذلیل اور بلوچ قوم نسل کشیکے تمام حدوں کو پار کرنے کا تہیہ کرچکاہے ۔ ریاست اس پر شدت کے ساتھ عمل پیرا ہے اور بلوچ قوم بھی اس امر کا ادراک رکھتاہے کہ پاکستان بلوچ وطن پر اپنے خونی قبضے کو طول دینے کے لئے ایسےواقعات میں مزید وسعت لاسکتاہے ۔ لیکن تاریخ کا مطالعہ اور مشاہدہ بارہایہ ثابت کرچکے ہیں کہ قوموں کو اس طرح کی بربریت سے زیر نہیں کیاجاسکتاہے ۔ بلوچ قوم اپنی قومی آزادی کے لئے کسی بھی قربانی سےدریغ نہیں کرے گی ۔ بلوچ قوم یہ سمجھتاہے کہ کاش ان کا دشمن تاریخ و تہذیب آشنا ہوتا تو شاید ایسے گھناوَنے جرائم کا ارتکاب نہ کرتا ۔ لیکن پاکستان کی یہی بربریت بلوچ قوم کے حوصلوں کو مزید جلا بخشے گی ۔بلوچ قوم قربانیوں کا نئی تاریخ رقم کرکے اپنی آزادی حاصل کریں گے ۔ انہوں نے مزےد کہا کہ بلوچستان کے انسانی بحران پر نام نہاد انسانی حقوق کے ادارو ں کی خاموشی یہ بتانے کے لئے کافی ہیں کہ یہ جنگ بلوچ قوم کو تنہا لڑنا پڑے گا اوراپنی قوت بازو سے نجات حاصل کرناہوگا۔ ہ میں پاکستان کے سول سوساءٹی ،ذراءع ابلاغ اور انسانی حقوق کے اداروں سے کوئی شکوہ نہیں لیکن بین الاقوامی اداروں کی بلوچستان بارے غفلت کئی سوالات جنم دیتاہے ۔ وہ ادارے جن کا قیام قوموںکے مسائل کا حل اور انسانی بحرانوں کا سدباب ہے وہ بھی اپنے لب سی چکے ہیں جس سے پاکستان اپنے جنگی جرائم میں مزید وسعت لارہاہے ۔ دل مراد بلوچ نے کہا کہ بلوچ نیشنل موومنٹ سالوں بلوچستان کی اصل حالات کو تفصےلی ومستندرپورٹ کی صورت میں عالمی دنیا، مےڈےا اورانسانی حقوق کے اداروں کے سامنے لاتا آرہاہے لیکن ابھی تکپاکستان کی بربریت کے خلاف کسی جانب سے بھی ٹھوس اقدام نہیں اٹھا یا گیا ہے ۔ یہ رویہ انسانی حقوق سے متعلق عالمی اداروں کی وجود پر سوالیہ نشان ہیں ۔ اب وقت آچکاہے کہ اقوام متحدہ ،انسانی حقوقکے عالمی ادارے بلوچستان میں فیکٹ فائنڈنگ مشن بھیجے اور حالات و واقعات کا براہ راست جائزہ لے ۔ 1اکتوبر ۔ ۔ ۔ کوءٹہ کے علاقے…

    مزید پڑھیں
  • نصیر آباد:فوج کا بائیس ہزار ایکڑ زرعی زمینوں پر قبضہ، فوجی بیس بنایا جائے گا۔

    نصیر آباد/رپورٹ (ریپبلکن نیوز) نصیر آباد میں عام لوگوں کے زمینوں پر پاکستانی افواج نے قبضہ کرنا شروع کردیا ہے۔ …

    مزید پڑھیں
  • تربت شہر میں چوری کی متعدد واقعات میں ریاستی ایجسنیوں کے اہلکار ملوث نکلے

    تربت /رپورٹ (ریپبلکن نیوز) تربت میں چوری واردات  میں ریاستی اہلکار ملوث نکلے تفصیلات کے مطابق بلوچستان کے ضلع کیچ…

    مزید پڑھیں
  • پاکستان اور امریکہ کے درمیان سمجھوتہ، چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ اپنے اختتام کے قریب

    پاکستان اور امریکہ کے درمیان سمجھوتہ، چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ اپنے اختتام کے قریب

    کوئٹہ/رپورٹ (ریپبلکن نیوز) چین کی پاکستان میں سب سے بڑی سرمایہ کاری، چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ اپنے اختتام کے…

    مزید پڑھیں
  • بلوچستان اور سندھ کے پانیوں کو وفاق کے تسلط میں لانے کی سازشیں شروع

    بلوچستان اور سندھ کے پانیوں کو وفاق کے تسلط میں لانے کی سازشیں شروع

    کوئٹہ/رپورٹ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان کے وسائل کی لوٹ مار گزشتہ ستر سالوں سے جاری ہے اور اس دوران بلوچستان کو…

    مزید پڑھیں
  • واشنگٹن: جبری گمشدگیوں کے خلاف جاری مہم، پاکستانی ادارے پریشان

    واشنگٹن: جبری گمشدگیوں کے خلاف جاری مہم، پاکستانی ادارے پریشان

    واشنگٹن/رپورٹ (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن پارٹی اور ورلڈ بلوچ آئرگنائزیشن کی جانب سے برطانیہ کے بعد اب امریکہ میں بڑے…

    مزید پڑھیں
  • سیندک پروجیکٹ میں افیسروں کا احتساب کون کرے گا!

    سیندک پروجیکٹ میں افیسروں کا احتساب کون کرے گا!

    کوئٹہ/رپورٹ (ریپبلکن نیوز) سیندک پروجیکٹ میں سب سے پہلے پاکستان کے کمپنی R.D.C سیندک ریسورچسز ڈویلپمنٹ کارپوریشن نے کام شروع…

    مزید پڑھیں
  • سیندک پروجیکٹ پر کام کرنے والے ملازمین کی مشکلات و شکایات پر تفصیلی رپورٹ

    سیندک پروجیکٹ پر کام کرنے والے ملازمین کی مشکلات و شکایات پر تفصیلی رپورٹ

    کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) پچھلے بیس سالوں سے سیندک پروجیکٹ کے ملازمین انتہائی ناگفتہ حالات سے گزر رہے ہیں جبکہ افسران…

    مزید پڑھیں
  • علی حیدر کی جبری گمشدگی پاکستان میں مظلوم اقوام کے لیے ملکی اداروں کی طرف سے واضح پیغام ہے

    علی حیدر کی جبری گمشدگی پاکستان میں مظلوم اقوام کے لیے ملکی اداروں کی طرف سے واضح پیغام ہے

    کوئٹہ / رپورٹ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان میں جبری گمشدگیوں کی داستان بہت پرانی ہے، لیکن فوجی ڈکٹیٹر جنرل پرویز مشرف…

    مزید پڑھیں
Back to top button
error: پوسٹ کو شیئر کریں